April 8, 2020

ٹوئیٹر اور یو ٹیوب انتظامیہ کا جواب سے انکار

ٹوئٹر اور فیس بک انتظامیہ نے سوشل میڈیا کی انفارمیشن کے لیے بھجوائی گئی کسی پاکستانی درخواست کا جواب نہیں دیا۔ اور اس کی وجہ پاکستان کی طرف سے میوچل لیگل اسسٹنٹ ٹریٹی پر دستخط نہ کرنا ہے۔

بائس جنوری کو وزارت سائنس اور ٹیکنالوجی کی جانب سے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی آئی ٹی میں پیش کردہ دستاویزات کے مطابق ٹوئیٹر کو 89 اور یو ٹیوب کو 35 درخواستیں بھجوائی گئی مگر کسی ایک درخواست کا جواب نہیں آیا۔


سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کو کل 4226 درخواستیں پاکستان کی طرف سے بھجوائی گئی جن میں سے صرف 2362 کا جواب ایا۔


سب سے زیادہ درخواستیں فیس بک کو بھجوائی گئی۔ بھجوائی گئی 2945 درخواستوں میں سے فیس بک نے 1655 درخواستوں کا جواب دیا۔


انسٹا گرام نے 591 میں سے 360 کو ، واٹس ایپ نے 196 میں سے 132، او ایل ایکس نے 256 میں سے 247، لوکنٹو نے 77میں سے 67 اور وی چیٹ نے تین میں سے ایک درخواست کا جواب دیا۔


وزارت سائنس اور ٹیکنالوجی کی دستاویزات کے مطابق ڈیلی موشن ، سنیپ چیٹ،آئی ایم او اور سکائپ نے پاکستان کی جانب سے کی گئی کسی درخواست کا جواب نہیں دیا۔

Written by

Muhammad Arslan is a journalist and a team member of Media Matters for Democracy. He writes regularly on issues related to media freedom, regulation, and digital rights.

No comments

leave a comment